6th Science Notes: Chapter 3 – ریشوں سے کپڑوں تک

Spread the love

چھٹویں جماعت سائنس - ریشوں سے کپڑوں تک

سوال 1: مندرجہ ذیل  ریشوں کی درجہ بندی  قدرتی اور  تالیفی  ریشوں کے تحت  کیجیے ۔

                        نائلون، اون،  کپاس،  ریشم،    پالسٹر،   جوٹ

جواب: قدرتی ریشے:      اون ،    کپاس،  ریشم،    جوٹ

            تالیفی  ریشے:       نائلون، پالسٹر   

سوال 2:    بتائیے  کہ مندرجہ ذیل  بیانات صحیح ہیں یا غلط:

 (a)      دھاگے ریشوں سے بنائے جاتے ہیں۔

(b)     کتائی ریشے بنانے کا عمل ہے۔

(c)      جوٹ ناریل کا بیرونی خول  ہوتا ہے۔

(d)     کپاس سے بیجوں کو علحٰیدہ کرنے کا  عمل  نبولے نکالنا کہلاتا ہے۔

(e)      دھاگوں کی بنائی  سے  کپڑے کا ٹکڑا تیار کیا جاتا ہے۔

(f)      ریشم کے  ریشے  پودے  کے تنے  سے حاصل  کیے جاتے ہیں۔

(g)     پالسٹر ایک قدرتی ریشہ ہے۔

جواب:            

(a)      دھاگے ریشوں سے بنائے جاتے ہیں۔(✔)

(b)     کتائی ریشے بنانے کا عمل ہے۔()

(c)      جوٹ ناریل کا بیرونی خول  ہوتا ہے۔()

(d)     کپاس سے بیجوں کو علحٰیدہ کرنے کا  عمل  نبولے نکالنا کہلاتا ہے۔(✔)

(e)      دھاگوں کی بنائی  سے  کپڑے کا ٹکڑا تیار کیا جاتا ہے۔(✔)

(f)      ریشم کے  ریشے  پودے  کے تنے  سے حاصل  کیے جاتے ہیں۔()

(g)     پالسٹر ایک قدرتی ریشہ ہے۔()

 

سوال 3:  خالی جگہیں پُر کیجیے :

 (a)      نباتاتی ریشے …………… اور  …………… سے حاصل ہوتے ہیں۔

(b)     …………… اور  ……………  حیوانی ریشے ہیں۔

جواب:

(a)      نباتاتی ریشے کپاس    اور  جوٹ سے حاصل ہوتے ہیں۔

(b)     اون   اور  ریشم   حیوانی ریشے ہیں۔  

 

سوال 4:  پودے  کے کن  حصوں  سے کپاس  اور جوٹ  حاصل ہوتی  ہے؟

جواب: کپاس کو کپاس کے پودے کے پھل سے حاصل کیا جاتا ہے ۔

            جوٹ کو  جوٹ کے تنے سے حاصل کیا جاتا ہے ۔        

 

سوال 5:  ایسی دو چیزوں  کے نام بتائیے  جو کہ ناریل  کے ریشوں سے  بنائی جاتی ہیں۔

جواب: رسّی  اور   دروازے کے میاٹ  ناریل کے  ریشوں سے بنائی جاتی ہیں۔         

 

سوال 6: ریشے سے دھاگے بنانے کا طریقہ  بیان کیجیے۔

جواب: ریشوں سے  دھاگوں  کو بنانے کا عمل  کتائی کہلاتا  ہے۔ اس عمل میں  روئی  کے گولے  سے ریشوں کو  کھینچتے ہیں  اور اینٹھتے  جاتے ہیں ، اس سے ریشے           ایک دوسرے  کے ساتھ مل  کر  دھاگے کی  تشکیل کرتے ہیں

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: Content is protected !!